02 December, 2008

QURBANEE


قربانی
جنگل میں ایک چرواہا بکریاں چرا رہا تھا کہ اس کے پاس ایک ٹویوٹا لینڈ کروزر آکر رکی گاڑی کا شیشہ نیچے اترا ایک صاحب نے اپنا سر باہر نکالا اور چرواہے کو مخاطب کرکے گویا ہوئے ۔ "اگر میں بغیر گنے تمھاری ان بکریوں کی تعداد بتادوں تو کیا تم مجھے ایک بکری دو گے؟" چرواہا پہلے تو اس مطالبے پر حیرت زدہ ہوا لیکن پھر راضی ہوگیا کہ وہ ایک بکری ان کے حوالے کردے گا اگر انہوں نے اسے بغیر گنے اس کی بکریوں کی تعداد بتادی۔ وہ صاحب اپنا لیپ ٹاپ لیکر گاڑی میں سے برآمد ہوئے اپنا جی پی ایس آن کیا اور سٹیلائیٹ ایمیجنگ کی مدد سے چرواہے کو اس کی بکریوں کی درست تعداد بتادی۔ اب تو چرواہا سخت حیرت زدہ ہوا اور ان صاحب کا سر سے پاؤں تک معائینہ کرنے کے بعد اس نے ایک بکری ان صاحب کو تھمادی جسے لیکر وہ بخوشی اپنی گاڑی میں سوار ہوئے ہی تھے کہ چرواہے نے ان سے ایک درخواست کی کہ اگر وہ انہیں یہ بتا دے کہ وہ کون ہیں تو کیا وہ اس کی بکری اسے واپس کردیں گے اس پر وہ صاحب بولے کیوں نہیں اگر تم یہ بتا دو کہ میں کون ہوں تو یہ بکری میں تمھیں واپس دے دوں گا۔ اس پر چرواہے نے فورا ہی کہا کہ میں نے آپ کو پہچان لیا ہے آپ ایک کنسلٹینٹ (Consultant) ہیں۔ اب حیران ہونے کی باری ان صاحب کی تھی وہ فورا ہی اپنی گاڑی سے نیچے اترے چرواہے کو اس کی بکری واپس کی اور اس سے پوچھا کہ بتاؤ تمھیں کیسے معلوم ہوا کہ میں کنسلٹینٹ ہوں تو چرواہا بولا کہ جب آپ نے اپنی اس مشین کے ذریعے بغیر گنے مجھے میری بکریوں کی تعداد بتا دی لیکن جب میں نے بکری کی جگہ اپنا کتا آپکے حوالے کیا تو آپ یہ نہ پہچان سکے کہ یہ بکری ہے یا کتا تو میں سمجھ گیا کہ آپ کنسلٹینٹ ہیں۔